چوڑھا کون ؟؟؟؟ڈاکٹر عظیم کنول چوھان


  • پیر
  • 2018-05-21
چوڑھا کون ؟؟؟؟ گزشتہ روز پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں مسلم لیگ ن اور پی ٹی آی کی سیاسی جھڑپ میں رکن اسمبلی عارف عباسی نے اقلیتی رکن طارق مسیح گل کو چوڑھا کہہ دیا۔ جس کی میں بھرپور مذمت کرتا ہوں۔ اردو لغت میں اس کے معنی ہیں۔ گندگی صاف کرنے والا ۔مزدور ۔ بھنگی۔ خاکروب وغیرہ ۔ اس کو کسی مذہب کے بارے میں جوڑنا قطعی غیر مناسب اور غیر اخلاقی فعل ہے۔ اور اگر کوی شخص اپنے بچوں کا پیٹ پالنے کے لیے اس قسم کی مزدوری کرتا ہے۔ محنت کرتا ہے۔ گند صاف کرتا ہے تو وہ حقیر کیوں ؟؟؟؟؟ قیام پاکستان کے وقت پنجاب کا پاکستان میں شامل ہونے یا نہ ہونے کا فیصلہ مسیحیوں کے ہاتھ میں تھا۔ ووٹ پاکستان کے حق میں دیا۔ اور پنجاب پاکستان میں شامل کر دیا گیا۔ تعلیم، صحت، دفاع اور ہر میدان میں مسیحیوں کی خدمات سے استفادہ کیا گیا۔ نوزائیدہ ملک کو چلانے میں بڑاحصہ ہمارا تھا۔۔۔۔ اور چوڑھا ان کو کہا جا رہا ہے۔ جن کے مشنری سکولز، کالجز، میں% 80 مسلم بیٹے اور بیٹاں پڑھ رہی ہے۔ معاشرے سے غلاظت صاف کرنے والے اگر چوڑے ہیں۔ تو ذخیرہ اندوز، دودھ میں اداویات میں اشیاء خورد نوش میں ملاوٹ کرنے ، انتشار پھیلانے والے، دہشت گرد، مذہبی منافرت اور تعصب کا بیج بونے والے کون ہیں ؟؟؟؟؟ اور کیا یہ گند صاف کرنے والا کام صرف مسیحی لوگ کرتے ہیں ؟؟؟؟؟ سندھ، خیبر پختون خوان اور دنیا کے ہر ملک میں ان پڑھ اور غریب لوگ ان میں ہر مذہب کے مزدور شامل ہیں لیکن ہمارے معاشرے میں تنگ ذہین، جاہل،تعصب کی بنیاد پر اس لفظ کو مسیحیوں کے ساتھ جوڑ دیا گیا۔ اس بات کی جتنی بھی مذمت کی جاے کم ہے۔ مزدوری جیسی بھی بھیک مانگنے سے لاکھوں درجے افضل ہے۔ خداوند کریم سے التجا ہے۔ کہ ہمارے پیارے ملک پاکستان کو تمام ذہنی مریضوں ، تعصب پسند، تنگ نظر چوہڑوں کے شر سے محفوظ رکھے۔ آمین خیر اندیش ڈاکٹر عظیم کنول چوھان