پاکستان میں پہلی بار مصنوعی دل لگانے کا کامیاب آپریشن


  • بدھ
  • 2018-07-11
ملکی تاریخ میں شعبہ طب نے اہم سنگ میل عبور کرلیا ہے اور کراچی کے قومی ادارہ برائے امراض قلب میں پہلی بار مصنوعی دل لگانے کا آپریشن کیا گیا۔ باسٹھ سالہ نفیسہ میمن پہلی مریضہ ہیں جنہیں مکینیکل دل لگایا گیا ہے جن کا دل صرف 15 فیصد کام کررہا تھا۔ ڈاکٹرز کی ٹیم کی سربراہی معروف ہارٹ ٹرانسپلانٹیشن ڈاکٹر پرویز چوہدری نے کی جب کہ ڈاکٹرز کی ٹیم کے دیگر ممبران میں امریکی ڈاکٹرز بھی شامل ہیں۔ ہارٹ ٹرانسپلانٹیشن آپریشن میں تقریباً 5 گھنٹے درکار ہوتے ہیں، آپریشن کے بعد سربراہ قومی ادارہ برائے امراض قلب ڈاکٹر ندیم نے آپریشن کی کامیابی کا اعلان کیا۔معروف سرجن ڈاکٹر پرویز چوہدری کا کہنا تھا کہ یہ ایک مصنوعی دل ہے جسے دل لگانے پر ایک کروڑ 10 لاکھ روپے کے اخراجات آتے ہیں۔ انہوں نے بتایاکہ مصنوعی دل لگانے کا عمل کامیاب ہوگیا ہے اور مریض کی حالت بھی خطرے سے باہر ہے۔