طبی سہولیات کا فقدان اڈا کوٹ شاکر پرخوفناک حادثہ ایک بچی اور کوٹ شاکر کا رہائشی اسماعیل لقمہ اجل بن گئے


  • بدھ
  • 2018-08-29
کوٹ شاکر(بیورو رپورٹ ۔ جاوید محرم گھلو) رورل ہیلتھ سنٹر کوٹ شاکر میں سہولیات کا فقدان: آج اڈا کوٹ شاکر پر ایک خوفناک حادثہ پیش جس میں ایک بچی اور کوٹ شاکر کا رہائشی اسماعیل لقمہ اجل بن گئے افسوسناک واقعہ میں متعدد افراد شدید زخمی ہوئے رورل ہیلتھ سنٹر کوٹ شاکر میں بنیادی طبی امداد ایمرجنسی مکمل طور پر فعال نہ ہونے کی وجہ سے ریسکیو ٹیم نے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں زخمیوں کو طبی امداد دے کر ریفر کیا کوٹ شاکر سے اٹھارہ ہزاری 45 کلومیٹر دور ہے آٹھ بجے کے قریب حادثہ ہوا 8:40 پر ریسکو ٹیموں نے موقع پر کر امدادی کارروائیاں شروع کیں حادثہ میں زخمی ہونے والوں کی حالت تشویشناک تھی جوکہ تاخیر ہونے سے مزید خراب ہو گئی آج کے واقع نے رورل ہیلتھ سنٹر کی فعالیت پر سوالیہ نشان اٹھا دیے ہیں حالانکہ ہسپتال میں میری معلومات کے مطابق ایمرجنسی کے لیے سرکاری ایمبولینس سروس موجود ہے ہر ماہ پیٹرول کی مد بھاری رقم جاری کی جاتی ہے مگر اس کا استعمال کدھر کیا جاتا ہے یہ کون جانے ہیں ہسپتال میں تین سینئر ڈاکٹر موجود ہیں مگر امدادی کارروائیاں اٹھارہ ہزاری ریسکیو کی جانب کی گئی ہیں ہسپتال عملہ کے مطابق ادویات نایاب ہیں مگر گزشتہ دنوں ایک ویڈیو سامنے آئی جس میں رورل ہیلتھ سنٹر کوٹ شاکر کا ملازم سرکاری ادویات کو فروخت کرنے کے لیے ہیر ڈریسر کی دوکان پر منتقل کر رہا تھا ضلعی انتظامیہ کو عوام الناس کی جانب سے اس مسلہ کا تحریری مسودہ بھیجا گیا مگر غریب عوام اب بھی سرکاری ادویات سے محروم ہیں اور پرائیویٹ ہسپتالوں میں علاج کروانے پر مجبور ہیں